97

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ریاستی دہشت گردی کا بازار گرم، شہادتیں 6 ہوگئیں

قابض بھارتی فوج نے نام نہاد سرچ آپریشن کے دوران فائرنگ کرکے مقبوضہ کشمیر کے دو مختلف اضلاع میں 6 کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق جنت نظیر وادی پر پابندیوں اور جبر کے بادل گہرے ہوتے جا رہے ہیں، مودی سرکار کے ریاستی درندے نہتے کشمیریوں کو بھنبھوڑ رہے ہیں۔ آج ضلع گندربال اور ضلع رمبان مجموعی طور پر 6 کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا گیا۔

قابض بھارتی فوج نے مسافر بس کے اغوا کا ڈرامہ رچا کر ضلع گندربال میں داخلی و خارجی راستوں کو بند کرکے نام نہاد سرچ آپریشن کیا اور چادر و چار دیواری کے تقدس کو پامال کرتے ہوئے گھر گھر تلاشی کے دوران بنیادی انسانی حقوق کی سنگین کی پامالی کی اور 3 نوجوانوں کو شہید کردیا۔

دوسری جانب ضلع رمبان میں بھی حکمراں جماعت بی جے پی کے مقامی رہنما کو اغوا کرکے یرغمال بنائے جانے کا بہانہ بناکر سرچ آپریشن کیا گیا جہاں 3 کشمیری نوجوانوں کو شہید کیا گیا جب کہ اس سرچ آپریشن میں ایک بھارتی فوج کے اہلکار کی ہلاکت کی بھی اطلاع ہے۔

واضح رہے کہ مقبوضہ کشمیر میں 5 اگست کو خصوصی حیثیت کے خاتمے کے بعد سے تاحال کرفیو نافذ ہے، اشیائے خورد و نوش میں کمی اور جان بچانے والی ادویہ کا فقدان پیدا ہوگیا ہے، کاروباری سرگرمیاں ٹھپ ہیں، ذرائع آمدورفت معطل اور مواصلاتی نظام منقطع ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں